پاکستان میں 2022 میں پولیو کا تیسرا کیس سامنے آگیا

Polio workers are giving vaccin to a child 640x480
پولیو ورکرز بچے کو پولیو سے بچاؤ کی ویکسین دے رہے ہیں۔ فوٹو: فائل

اسلام آباد: پاکستان میں رواں سال 2022 میں پولیو کا تیسری کیس سامنے آگیا ہے، پولیو کا یہ کیس شمالی وزیرستان میں آیا ہے جس نے ایک سالہ بچے کو معذور کردیا ہے، جبکہ اس پولیو کیس کی تصدیق پاکستان نیشنل لیبارٹری اسلام آباد نے بھی کردی ہے.
مردان ٹائمز کے مطابق پاکستان میں رواں سال یعنی 2022 میں پولیو کا ایک اور کیس سامنے آیا ہے جس کی وجہ سے شمالی وزیرستان میں ایک سالہ بجہ معذور ہوگیا ہے. پولیو کیس کی تصدیق پاکستان میں موجود نیشنل لیبارٹری اسلام آباد نے بھی کردی ہے.
مزید تفصیلات کے مطابق قومی ادارہ صحت اسلام آباد میں واقع پاکستان نیشنل لیبارٹری نے ملک میں تیسرے پولیو کیس کی باقاعدہ طور پر تصدیق کی ہے۔ اس حوالے سے تفصیلات بتاتے ہوئے وزیر صحت عبدالقادر پٹیل نے کہا کہ پاکستان کے شمالی وزیرستان سے تعلق رکھنے والہ ایک اور بچہ عمر بھر کے لیے ایسی بیماری سے معذور ہوگیا ہے جس کا تدارک ممکن ہے. انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں بحیثیت قوم پولیو کا خاتمہ نہ ہونا نہایت ہی بڑا المیہ اور افسوس کی بات ہے. انھوں نے کہا کہ پولیو کا ایک بھی کیس ہمارے لیے بہت بڑا نقصان دہ ہے۔
وزیر صحت عبدالقادر پٹیل نے مزید کہا کہ بچوں کو عمر بھر کی معذوری سے بچانے کے لیے یہ بات نہایت ہی ضروری ہے کہ ہر مہم میں تمام بچوں کو حفاظتی قطرے ضرور پلوائیں جائیں۔
وزیر صحت عبدالقادر پٹیل نے پولیو کے تیسرے کیس پر نہایت ہی افسوس اور تشویش کا اظہار کیا اور کہا میں بذات خود پولیو کے خاتمے کی کوششوں کی نگرانی کر رہا ہوں. انھوں نے مزید کہا کہ میں نے پولیو کیسز کے آنے کے بعد خیبرپختونخوا کا دورہ کیا ہے اور متاثرہ خاندانوں سے ملاقات کی ہے اور ابھی مزید حساس اضلاع کا دورہ بھی کروں گا۔
پاکستان میں وفاقی سیکرٹری برائے صحت عامر اشرف خواجہ نے اس حوالے سے مزید کہا کہ اس سال پاکستان میں پولیو کا پہلے کیس آنے کے بعد ہمیں مزید کیسز آنے کا خدشہ تھا. اور اس کی اہم وجہ پولیو وائرس کا پھیلاؤ ہے. انھوں نے کہ بھی کہا جب تک پولیو کے قطرے ہر بچے تک نہیں پہنچتے اس وقت تک پولیو کا خدشہ رہے گا.

Related Posts