ڈپٹی کمشنر، اسٹنٹ کمشنراور وکلاء کی جانب سے ایڈیشنل سیشن جج پر تشدد کے خلاف مقدمہ درج

court hammer

منڈی بہاؤالدین: ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے ڈپٹی کمشنر، اسٹنٹ کمشنر کو سزا سُنائی تھی جس پر وکلاء نے اُن کو تشدد کا نشانہ بنایا.
مردان ٹائمز کے مطابق منڈی بہاوالدین میں وکلاء نے قانون کی دھجیاں اُڑاتے ہوئے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کو شدید تشدد کا نشانہ بنا دیا. زرائع کے مطابق متعلقہ ایڈیشنل سیشن جج نے منڈی بہاؤالدین کے ڈپٹی کمشنر طارق علی بسرا اور اسٹنٹ کمشنر امتیاز بیگ کو سزا سُنائی تھی جس پر وکلاء نے انھیں تشدد کا نشانہ بنایا. وکلاء کے خلاف مقدمہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راؤ عبدالجبار خان کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے.
پنجاب کے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی اس واقع پر سخت نوٹس پر آئی جی پنجاب کے حکم پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کو تشدد کا نشانہ بنانے کے واقعے پر مقدمہ درج کر لیا گیا ہے. ایڈیشنل سیشن جج کو عدالت میں تشدد کروانے کے الزام میں منڈی بہاوالدین کے ڈپٹی کمشنر، اسٹنٹ کمشنر، وکلاء کے صدر اور جنرل سیکٹری سمیت 10 افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا ہے.


اس واقع پر اعلیٰ حکام کی جانب سے حکم جاری کرنے پر ڈی پی او منڈی بہاؤالدین اور متعلقہ ڈی ایس پی کو بھی معطل کردیاگیا ہے.
منڈی بہاؤالدین میں ایڈیشنل سیشن جج پر تشدد کرنے کے واقعے پر پنجاب بار کونسل نے جج سے بدتیمیزی کا سخت نوٹس لیا ہے. اس سلسلے میں پنجاب بار کونسل نے اس واقعے میں‌ ملوث بار کے سیکرٹری سمیت دیگر وکلاء کو شوکاز نوٹس بھی جاری کئے ہیں. واقعے کے خلاف بنجاب بار کونسل نے ملوث وکلاء‌کو ذاتی حیثیت میں 6 دسمبر کو طلب کرکے پیش ہونے کا حکم جاری کیا ہے.

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin
Share on pinterest
Share on whatsapp

Related Posts