مسلم لیگ (ن) کے بڑوں نے حمزہ شہباز کی وزارت اعلیٰ بچانے کے لئے سر جوڑ لیے

PML N Parlimentory meeting Photo PMLN site 640x480
پاکستان مسلم لیگ (ن) کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس۔ فوٹو: پی ایم ایل این ویب سائٹ

اسلام آباد: گزشتہ روز پنجاب کے 20 نشتوں پر ہونے والے ضمنی انتخابات میں مسلم لیگ (ن) کی شکست اور پی ٹی آئی کی کامیابی کے بعد وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت پاکستان مسلم لیگ (ن) کی قیادت کا ایک اہم ترین اجلاس جاری ہے۔
مردان ٹائمز کے مطابق گزشتہ روز یعنی 17 جولائی کو پنجاب اسمبلی کے 20 نشتوں کے لئے ہونے والے حالیہ ضمنی انتحابات کے نتیجے میں پاکستان تحریک انصاف کی تاریخی کامیابی اور مسلم لیگ (ن) کی بدترین شکست کے بعد مسلم لیگ (ن) کے بڑوں کی ایک اہم بیٹک وزیراعظم شہباز شریف کی صدارت میں جاری ہے، جس میں وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز، وفاقی وزرا رانا ثناء اللہ، خواجہ آصف، مریم اورنگزیب اور اعظم نذیر تارڑ، سردار ایاز صادق، ملک احمد خان، عطاء اللہ تارڑ، سردار اویس لغاری، رانا مشہود شرکت کررہے ہیں۔ مردان ٹائمز کو موصول ہونے والی تازہ ترین خبروں کے مطابق اس اجلاس میں پنجاب میں ہونے والی حالیہ ضمنی انتخابات میں پارٹی کی شکست اور آئندہ کی سیاسی حکمت عملی پر غور کیا جارہا ہے۔ اس حوالے سے مسلم لیگ (ن) کے اندرونی زرائع سے حاصل ہونے والی معلومات کے مطابق پنجاب کے ضمنی انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کی تاریخی کامیابی اور مسلم لیگ (ن) کی بدترین شکست کے بعد وزیراعظم شہباز شریف نے پارٹی کی مرکزی قیادت کا اہم ترین اجلاس طلب کیا تھا۔ پارٹی کے اندرونی زرائع کا کہنا ہے کہ اس اجلاس میں پنجاب میں ضمنی انتخابات میں شکست کی وجوہات اور آئندہ کی حکمت عملی کے بارے میں غور و فکر کیا جارہا ہے، جبکہ اس کے علاوہ ایک اور حکمت عملی کے بارے میں بھی تبادلہ خیال کیا جارہا ہے کہ کس طرح پنجاب میں حمزہ شہباز کی وزارت اعلیٰ بچایا جائے؟
مسلم لیگ (ن) کے اندرونی زرائع کا مزید کہنا ہے کہ وزیراعظم شہباز شریف اپنے حکومتی اتحادیوں سے بھی رابطے کریں گے جبکہ آئندہ کی حکمت عملی تیار کرنے کے لئے پی ڈی ایم میں شامل اتحادی جماعتوں کا اجلاس بھی طلب کیا جائے گا۔ اس حوالے سے قوی امکان یہ ہے کہ پی ڈی ایم میں شامل حکومتی اتحادی جماعتوں کا اجلاس کل طلب کیا جائے گا۔

Related Posts