پاکستان کی سرزمین کا ایمن الزہراوی کی ہلاکت میں استعمال کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، پاک فوج

major general babar iftikhar press conference Photo By Dawn News 640x480
ترجمان پاک فوج، میجر جنرل بابرافتحار۔ فوٹو: ڈان نیوز

راولپنڈی: پاکستانی فوج کے ترجمان ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے اپنے ایک حالیہ بریفنگ میں کہا ہے کہ القاعدہ کے رہنما ایمن الظواہری پر افغانستان میں ہونے والے حملے میں پاکستانی سرزمین استعمال ہونے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔
مردان ٹائمز کے مطابق پاکستان فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں بات کرتے ہوے کہا کہ وزارت خارجہ کی وضاحت کے بعد کسی بیان کی گنجائش باقی نہیں رہتی۔
میجر افتحار بابر نے مزید کہا کہ وزارت خارجہ کے بیان میں واضح طور پریہ بتایا گیا ہے کہ افغانستان میں القاعدہ کے رہنما ایمن الظواہری پر ہونے والے حملے میں امریکی ڈرون نے پاکستانی فضائی حدود استعمال کی۔ انھوں نے مزید کہا کہ اس بات کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کہ پاکستان کی سرزمین استعمال ہوئی ہو۔
پاک فوج کے ترجمان میجر افتحار بابر نے میڈیا کو مزید بتایا کہ بلوچستان کے ضلع لسبیلہ کے قریب پاک فوج کا ہیلی کاپٹر موسم کی خرابی کے باعث حادثے کا شکار ہوا۔ انھوں نے کہا کہ اس المناک حادثے کی وجہ سے ہم سب نہایت ہی کرب میں ہیں مگر دوسری طرف اس سانحے کے بعد سے سوشل میڈیا پر بعض افراد کی طرف سے غلط اور لغو پروپیگنڈا کیا جارہا ہے۔ ترجمان پاک فوج نے کہا کہ سوشل میڈیا پر اس قسم کی قیاس آرائیاں بہت حساس نوعیت کے ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ اس طرح کی غلط اور لغو قسم کی قیاس آرائیاں شہدا کے لواحقین کے دکھ اور تکلیف کا سبب بن رہی ہیں۔

Related Posts