بھارتی وزیراعظم ہیروئن سمگلرو میں شامل

PM Narendar Modi

نئی دہلی: انڈیا کے وزیراعظم مودی 3 ہزار کلوگرام کی ہیروئن افغانستان سے بھارت میں اسمگل کرنے کی کوشش کی.
مردان ٹائمز کو بھارت سے حاصل ہونے والی تفصیلات کےمطابق بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے ایک انتہائی بااعتماد اور قریبی ساتھی کے زیرانتظام چلنے والی گینگ سے گجرات کی بندرگاہ مندراپورٹ پر 3 ہزار کلوگرام کی اعلی قسم کی ہیروئن برآمد ہوئی ہے. بھارتی میڈیا کے مطابق ان ہیرئن کی مالیت تقریباً 3 بلین ڈالر ہے.
بھارتی میڈیا کے مطابق یہ ہیروئن افغانستان کے شہر قندھار سے بھارت کو اسمگل ہو رہی تھی اور پھر وہاں سے بھارت کے گجرات شہر کی بندرگاہ مندرا پورٹ پہنچ گئی تھی. مزید تفصیلات کے مطابق بھارتی پورٹ پر یہ ہیروئن 2 کینٹرز میں چھپائی گئی تھی.
بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ گوتم عدانی نریندر مودی کے قریبی ساتھی ہے. جبکہ بھارت میں ایک چھوتھائی کارگو کی سپلائی بھی انہی گوتم عدانی کی زیرنگرانی میں ہوتی ہے. اسی طرح بھارت کے دوسرے شہروں گوا، کیرالا، آندھراپردیش، مہاراشٹرا، تامل ناڈو اور اوڈیشا کی پورٹس بھی بھارتی وزیراعظم کے انہی دوست کے نگرانی اور زیرانتظام ہیں.
مردان ٹائمز کو بھارت سے حاصل ہونے والی رپورٹس کے مطابق بھارت میں جس پورٹ سے ہیروئن برآمد ہوئی ہے اس میں بھارتی وزیراعظم کا حصہ 25 فیصد ہے.
یہ خبر بھی پڑھیں افغانستان: امریکہ کے بعد بھارت کے را ایجنٹوں نے بگرام ایربیس خالی کردیا
تفصیلات کے مطابق جیسے ہے بھارتی میڈیا میں اتنے بڑے پیمانے پر ہیروئن کی برآمدگی ہوئی ہے تو وہاں پر اپوزیشن رہنماؤں نے نریند مودی کو اس کا زمہ دار ٹھرایا ہے. اور الزام عائد کیا ہے کہ یہ لوگ ان ہیروئین سے بھارتی مستقبل کو بیچ رہے ہیں. اپوزیشن رہنماؤں کا مزید کہنا تھا کہ یہ ہو ہی نہیں ہوسکتا کہ حکومت کو اتنی بڑی مقدار میں ہیروئن کا کچھ معلوم نہ ہو.
ادھر بھارت میں حکومت مخالف جماعت کانگریس نے بھارتی سپریم کورٹ سے مطالبہ کیاہے کہ وہ اتنے بڑے پیمانے پر ہیروئن برآمدگی کی تحقیقات کرے. کانگریس نے مزید کہا کہ یہ انتہائی اہم اور سنجیدہ معاملہ ہے جس پر بھارتی وزیراعظم کو جواب دینا ہوگا.
بھارت میں جہاں ایک جانب ہیروئن پر سپریم کورٹ سے تحقیقات کا مطالبہ کیا جا رہا ہے تو دوسری طرف بھارتی وزیراعطم نریندر مودی اور ان کی حکمران جماعت بی جے پی کی جانب سے اس معاملے پر نہایت خاموشی کا مظاہرہ کیا جا رہا ہے.
یہ بات واضح رہے کہ بھارت میں یہ ہیروئن کچھ دن پہلے پکڑی گئی تھی اور اس کی اطلاع بھارتی ادارے ڈائریکٹوریٹ آف ریونیو انٹیلی جنس کو ملی تھی جس کے بعد اسی ادارے نے گجرات کے بندرگاہ پر چھاپہ مار کر کنٹینرز کے خفیہ خانوں سے 3 ہزار کلوگرام کا ہیروئن برآمد کیا. جس کی مالیت 3 بلین ڈالر ہے. اور اسی کاراوائی کے دوران بھارتی ادارے ڈائریکٹوریٹ آف ریونیو انٹیلی جنس 2 افراد کو موقع سے بھی گرفتار کیا. جبکہ ہیروئن کی اسمگلنگ میں بھارتی وزیراعظم کے ملوث ہونے کی تفصیلات اس وقت سامنے آئی جب گرفتار کیے گئے ان 2 افراد سے پوچھ گچھ کی گئی.

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin
Share on pinterest
Share on whatsapp

Related Posts