بھارت میں دائیں بازو ہندوانتہا پسندوں کی جانب سے مسلمانوں پر کھلی جگہوں میں نمازپڑھنے پر مزاحمت کا سامنا

Muslims Praying in Open Places

نئی دہلی: بھارتی مسلمانوں کو ہندوں انتہاپسندوں کی طرف سے مسلسل تذلیل کا نشانہ بنایا جاتا ہے اور وہاں پر مسلمان نہایت ڈر اور خوف کی کیفیت سے گزررہے ہیں.
مردان ٹائمز کو بھارت سے موصول ہونے والی تازہ ترین خبروں کے مطابق بھارت میں دائیں بازو کی انتہا پسند ہندوں نے مسلمانوں کی زندگیاں اجیرن کررکھی ہے. اور ان کو کھلی جگہوں پر نماز پڑھنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے.
مردان ٹائمز کے مطابق گذشتہ تین ماہ سے ہر جمعے کو انتہائی دائیں بازو کے ہندو گروہوں کے لوگ باقاعدگی سے بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی کے اہم علاقے میں جمع ہوتے ہیں. ان لوگوں کا اہم مقصد مسلمانوں کو عوامی مقامات پر نماز ادا کرنے سے روکنا ہوتا ہے.
مزید تفصیلات کے مطابق دائیں بازو کی انتہا پسند ہندو گروہوں کا مطالبہ ہے کہ مسلمانوں پر پارکنگ ایریاز، خالی پلاٹوں، رہائشی مقامات اور کھلی جگہوں پر نماز پڑھنے پر پابندی عائد کی جائے جہاں پر وہ کئی سالوں سے نمازیں پڑھتے آئے ہیں.
اطلاعات کے مطابق دائیں بازو کی انتہا پسند ہندو گروہوں کے لوگ اگھٹا ہوکر مسلمانوں کے خلاف وہی روش اختیار کئے ہوئے ہیں جو کہ 1450 سال پہلے مکہ معظمہ میں حضورنبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے زمانے میں مشرکین مکہ نے اس وقت کے مسلمانوں کے خلاف اختیارکیاتھا. بھارت میں دائیں بازو کے لوگ مسلمانوں کے نعرہ بازی کرتے ہیں، نمازیوں پر جملے کستے ہیں، ان جگہوں کی طرف جانے والی داخلی راستوں پر گاڑیاں کھڑی کرکے انھیں بند کرتے ہیں اور انھیں ‘جہادی’ کے نام سے پکارتے ہیں. بعض اطلاعات کے مطابق ان نمازیوں کو ‘پاکستانی’ بھی کہہ کر پکارتے ہیں.
ان نازک حالات کے پیش نظر کافی عرصے سے مسلمان اپنے نماز پولیس کے سخت پہرے میں ادا کررہے ہیں. اس بارے میں جب ہندو گروہوں کے لوگوں سے پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ وہ نماز یا مسلمانوں کے خلاف نہیں بلکہ کھلے مقامات پر نماز پڑھنے کے خلاف ہیں کیونکہ یہ ‘زمین کا جہاد’ ہے.
اُدھر مسلمان اس حوالے سے کہہ رہے ہیں کہ ہندو کی جانب سے اس قسم کا رویہ یہ تاثر دے رہا ہے کہ ‘مسلمان جہاں نماز پڑھ رہے ہیں وہ ادھر قبضہ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں’.
یاد رہے کہ سنہ 2014 سے بھارت میں برسراقتدار پارٹی ‘بھارتیہ جنتہ پارٹی (بی جے پی) ان ہندو قوم پرست گروہوں کو روایتی طور پر مسلسل تحفظ فراہم کرتی آئی ہے. بھارت میں جب سے بی جے پی کی حکومت آئی ہے مسلمانوں کے خلاف کاروائیوں میں مسلسل اضافہ ہورہاہے اور ان کی زندگی اجیرن بنا دی گئی ہے.

Related Posts