سائفر کے حوالے سے عمران خان کی ایک اور آڈیو لیک

Imran_Khan
عمران خان، سابق وزیراعظم اور پی ٹی آئی چئیرمین۔ فوٹو: فائل

اسلام آباد: سابق وزیراعظم اور چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور ان کی ٹیم کی سائفر سے متعلق ایک اور آڈیو منظرِ عام پر آ گئی۔
مردان ٹائمز کے مطابق عمران خان کی سائفر کی سازشی کہانی کا دوسرا آڈیو حصہ بھی منظرعام پر آگیا ہے جس میں عمران خان کا کہنا ہے کہ ‘اچھا شاہ جی ہم نے کل ایک میٹنگ کرنی ہے۔ عمران خان آڈیو میں مزید کہتے ہیں کہ آپ نے ہم تینوں (عمران خان، اعظم خان، شاہ محمود قریشی) نے، وہ لیٹر ہے نا اس کے چپ کر کے مرضی کے منٹس لکھ دیں۔’
آڈیو میں سابق وزیراعظم عمران خان کا مزید کہنا ہے کہ ‘یہ اعظم کہہ رہا ہے کہ اس کے منٹس بنا لیتے ہیں، اسے فوٹو اسٹیٹ کر کے رکھ لیتے ہیں۔’
نئے آڈیو قسط میں عمران خان کے پرنسپل سیکریٹری اعظم خان پوچھتے ہیں کہ یہ سائفر 8، 9 کو آیا ہے، یا 8 کو آیا ہے؟ اس کے جواب میں عمران خان کہتے ہیں کہ ‘ لیکن میٹنگ 7 کو ہوئی ہے، ہم نے تو امریکنز کا نام لینا ہی نہیں ہے، لیکن ایشو یہ ہے کہ پلیز کسی کے منہ سے ملک کا نام نہ نکلے۔’
نئے آنے والے آڈیو میں پی ٹی آئی چئیرمین کا مزید کہنا ہے کہ ‘آپ سب کے لیے یہ بہت اہم مسئلہ ہے کہ کس ملک سے لیٹر آیا ہے؟ میں کسی کے منہ سے اس کا نام نہیں سننا چاہتا۔’
نئے افشا شدہ آڈیو میں پی ٹی آئی رہنما اسد عمر نے سابق وزیراعظم عمران خان سے مخاطب ہو کر کہا کہ ‘آپ جان بوجھ کر لیٹر کہہ رہے ہیں، یہ لیٹر نہیں میٹنگ کی ٹرانسکرپٹ ہے۔’
اسد عمر کی بات کی جواب میں پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان نے کہا کہ ‘وہی ہے نا میٹنگ کی ٹرانسکرپٹ ہے، ٹرانسکرپٹ یا لیٹر ایک ہی چیز ہے، لوگوں کو ٹرانسکرپٹ کی تو نہیں سمجھ آنی تھی، آپ پبلک جلسے میں ایسے ہی کہتے ہیں۔’

Related Posts