روالپنڈی سرکس میں موٹر سائکلسٹ موت کے کنویں میں زندگی کی بازی ہارگیا

Laki Irani Sarkas player Died during Performance 640x480
راولپنڈی ایوب پارک میں سرکس کے دوران ایک شخھص موت کے کنویں میں کرتب دکھاتے ہوئے گر کر جانبحق ہوگیا۔ فوٹو: فائل

راولپنڈی: راوالپنڈی میں جاری لکی ایرانی سرکس کے دوران غربت کی وجہ سے اپنی جان کو خطرے میں ڈال کر دوسرے لوگوں کو تفریح دینے والا شخص اور موٹر سائیلسٹ بخت اللہ کو دوران کرتب حادثہ کا شکار ہوکر زندگی کی بازی ہار گیا.
مردان ٹائمز کے مطابق راوالپنڈی میں جاری لکی ایرانی سرکس کے دوران ایک موٹرسائکلسٹ نے موت کے کنویں میں کرتب دکھاتے ہوئے حادثے کا شکار ہوگیا. تفصیلات کے مطابق موٹرسائکلسٹ کا نام بخت اللہ تھا اور سرکس میں موت کے کنویں میں موٹرسائکل چلا کر لوگوں کو تفریح فراہم کررہا تھا کہ اس دوران وہ حادثے کا شکار ہوکر موٹرسائکل سے گر گیا.
حادثے کے بعد زخمی موٹر سائیکلسٹ بخت اللہ کو فوری طبی امداد دینے کے لئے نزدیکی اسپتال کو منتقل کیا گیا لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔
کرتب دکھانے کے دوران ایک ویڈیو بھی بنائی گئی جس میں واضح طور پر دیکھا جاسکتا ہے کہ راوالپنڈی میں جاری اس سرکس میں موت کے کنویں میں موٹر سائیکل چلاتے ہوئے اس محنت کش بخت اللہ سے موٹر سائیکل لاکھڑائی جس کی وجہ سے بخت اللہ کی بدن پر شدید چوٹیں آئیں۔


اُدھر راولپنڈی کی پولیس کو اس حادثے کی کوئی خبر بھی نہیں ہے اور وہ اس بڑے جادثے سے مکمل طور پر بے خبر نکلی. اس حوالے سے جب تھانہ مورگاہ کے ڈیوٹی پر مامور محرر سے رابطہ کیا گیا تو اس نے کہا کہ ہمیں سرکس میں پیش آئے واقعے کی کوئی اطلاع نہیں دی گئی۔
تاہم اس سرکس کے ایونٹ آرگنائزر لکی ایرانی سرکس محمد ستار نے واقعے کے بارے میں کہا ہے کہ مخنت کش بخت اللہ جوکہ حادثے میں زخمی ہونے کی وجہ سے دم توڑ گئے ہے، ان کو سرکس انتظامیہ کی جانب باقائدہ کفالت جائے گی۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ اب یہاں سے اس لکی ایرانی سرکس کو گوجرخان منتقل کیا جا رہا ہے کیونکہ ایوب پارک میں اس کا پہلے سے طے شدہ شیڈول مکمل ہوچکا ہے.

Related Posts